کاغذ یہی بہشت بریں کی رسید ہے

ادب حسینی

2018-08-12

173 مشاہدہ

اے باغ عسکریؑ کے مقدس ترین پھول

اے کعبہ فروغ نظر، قبلہ اصول

آ ہم سے کر خراج دل وجاں کبھی قبول      تیرے بغیر ہم کو قیامت نہیں قبول

دنیا نہ مال و زر نہ وزارت کے واسطے   ہم جی رہے ہیں تیریؑ زیارت کے واسطے

ہیں تیرے اختیار میں قدرت کی مرضیاں   تیرے سوا کسی سے امیدیں ہیں فرضیاں

سائل کی جانتا ہے تو حاجت عرضیاں     ہم پھر بھی اس لئے تجھے لکھتے ہیں عرضیاں

                   ان پر تو دستخط جو کرےاپنی عید ہے

                     کاغذ یہی بہشت بریں کی عید ہے

نئے مواضیع

اکثر شائع

شایدآپ کو بھی پسند آئے